مسلم لیگ ن، پیپلز پارٹی میں حکومت سازی پر اتفاق، زرداری صدر، شہباز وزیراعظم

133

دونوں جماعتوں میں طے پانے والے معاہدے کے تحت پاکستان مسلم لیگ ن کے شہباز شریف وزیر اعظم اور پیپلز پارٹی کے آصف علی زرداری صدر مملکت بنیں گے۔

پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلال بھٹو زرداری نے اسلام آباد میں پاکستان مسلم لیگ ن کے صدر شہباز شریف کے ہمراہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ دونوں جماعتوں نے حکومت سازی کے لیے قومی اسمبلی میں اپنے نمبر پورے کر لیے ہیں۔

بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ آئندہ وزیراعظم کے لیے شہباز شریف دونوں پارٹیوں کے متفقہ امیدوار ہوں گے جب کہ  آصف زرداری صدر کے لیے مشترکہ امیدوار ہوں گے۔

اس موقع پر شہباز شریف کا کہنا تھا کہ پیپلز پارٹی اور ن لیگ کے پاس حکومت بنانے کے نمبر پورے ہیں۔ ’ہم نئی حکومت بنانےکی پوزیشن میں ہیں۔‘

شہباز شریف کا مزید کہنا تھا کہ آزاد امیدوار اپنی اکثریت ثابت کریں اور  حکومت بنائیں۔

انہوں نے کہا کہ ’ہم دل سے قبول کریں گے۔ تحریک انصاف نے سنی اتحاد کونسل اور ایم ڈبلیو ایم سے اتحاد کیا، لیکن اس کے باوجود ان کے پاس حکومت  بنانےکے لیے نمبر پورے نہیں ہیں۔‘

ان کا کہنا تھا کہ وہ مشاورت کے ساتھ آگے بڑھیں گے۔ ’طے پایا ہے کہ آصف علی زرداری کو اگلے 5 برس کےلیے صدر مملکت بنایا جائے گا۔‘

صدر ن لیگ کا کہنا تھا کہ آصف زرداری اور بلاول کے بھرپور تعاون پر ان کا شکریہ ادا کرتے ہیں، یہ باریاں لینے کی بات نہیں، ہمیں پاکستان کو مشکلات سے نکالنا ہے۔

انہوں نے یہ بھی کہا کہ مسلم لیگ (ق)، ایم کیو ایم اور آئی پی پی ہمارے اتحادی ہیں، ہمارے اس اتحاد میں بزرگ بھی ہیں اور جوان بھی، دونوں مل جائیں تو بڑی طاقت بنتے ہیں۔

آصف علی زرداری نے کہا کہ سب دوستوں کو خوش آمدید کہتے ہیں، یقین دلاتے ہیں آنے والی نسلوں کے لیے مل کر کام کریں گے۔

اس سے قبل اسلام آباد میں دونوں جماعتوں کے رہنماؤں کے درمیان ملاقات ہوئی جس میں حکومت سازی سے متعلق امور پر گفتگو ہوئی۔

ملاقات میں بلاول بھٹو، شہباز شریف، اسحاق ڈار ، مراد علی شاہ، قمر زمان کائرہ اور  احسن اقبال بھی موجود تھے۔