طوفان بائے پر جوائے: ساحلی علاقوں میں شدید بارشوں کی پیش گوئی

262

محمکہ موسمیات نے ماہی گیروں کو ہدایت کی ہے کہ وہ 11 جون 2023 کے بعد سے کھلے سمندر میں نہ جائیں، تاوقتیکہ بحیرہ عرب میں بننے والا طوفان کا سسٹم ختم نہ ہو جائے۔

پاکستان کے محکمہ موسمیات نے بحیرہ عرب میں اٹھنے والے سمندری طوفان ’بائے پر جوائے‘ کے پیش نظر ملک کے ساحلی علاقوں میں تیز ہواؤں اور گرج چمک کے ساتھ ’انتہائی شدید‘ بارشوں سے خبردار کیا ہے جب کہ طوفان مسلسل پاکستان کی جانب بڑھ رہا ہے۔

محکمہ موسمیات کے بیان کے مطابق بحیرہ عرب، جو پاکستان کی جنوبی ساحلی پٹی کے ساتھ جڑا ہوا ہے، میں رواں ہفتے سمندر کے اوپر ہوا کا شدید کم دباؤ انتہائی شدید طوفان ’بائے پرجوائے‘ کی شکل اختیار کر چکا ہے، جس کی لہریں تقریباً 20 فٹ بلند ہیں۔

محکمہ موسمیات کے بیان کے مطابق: ’مشرقی وسطی بحیرہ عرب پر انتہائی شدید سمندری طوفان بائے پرجوائے اپنی شدت کو برقرار رکھتے ہوئے گذشتہ 12 گھنٹے کے دوران شمال- شمال مشرق کی جانب مزید آگے بڑھتا ہوا اب کراچی کے جنوب میں 840 کلومیٹر کے فاصلے پر موجود ہے۔‘

محکمہ موسمیات نے پیش گوئی کی ہے کہ طوفان کے باعث جنوبی اور جنوب مشرقی سندھ (کراچی، ٹھٹھہ، سجاول، بدین، تھرپارکر اور میرپورخاص اضلاع) میں تیز ہواؤں (60-80 کلومیٹر فی گھنٹہ) کے ساتھ گرج چمک کے ساتھ 13 جون کی شام یا رات کے بعد شدید بارش متوقع ہے۔

اسی طرح آٹھ سے 10 فٹ بلند طوفانی لہروں کے امکان کے باعث ماہی گیروں کو مشورہ دیا گیا ہے کہ وہ 11 جون 2023 کے بعد سے کھلے سمندر میں نہ جائیں، تاوقتیکہ بحیرہ عرب میں بننے والا طوفان کا سسٹم ختم نہ ہو جائے کیونکہ بحیرہ عرب میں طوفان کے باعث اونچی لہریں ساحل تک آسکتی ہیں۔