سات رکن ممالک میں‌ کورونا کی دوسری لہر کا خدشہ ہے – یورپی یونین

40

یورپی یونین نے کہا ہے کہ اس کے 7 رکن ممالک میں کورونا کی دوسری لہر کا شدید خطرہ ہے جس سے بچنے کیلئے خصوصی اقدامات اٹھانے چاہئیں۔

میڈیا رپورٹ کے مطابق یورپی یونین کے متعدی بیماریوں کے مرکز کی سربراہ نے خبردار کیا ہے کہ سپین، رومانیہ، بلغاریہ، کروشیا، ہنگری، چیک ریپبلک، مالٹا کے ہسپتالوں میں نئے داخل ہونے والوں اور اموات کی تعداد میں اضافہ ہورہا ہے/

انہوں نے کہا کہ دیگر رکن ممالک میں بھی متاثرین کی تعداد بڑھ رہی ہے۔

ادھر یورپی یونین کی ہیلتھ کمشنر نے کہا کہ دوسری لہر تشویش کی بڑی وجہ ہے، اسے روکنے کیلئے اقدامات کیے جانے چاہئیں، سات رکن ممالک میں نئے مریضوں کا تناسب بتدریج بڑھ رہا ہے، صورتحال مارچ سے بھی زیادہ خراب ہورہی ہے۔

دوسری جانب فرانسیسی شہر مارسیل میں بارز، ریسٹورنٹس، جمز بند کرنے کی ہدایت کردی گئی۔ پیرس میں بارز کو جلدی بند کرنیکا حکم دیا گیا ہے۔ جرمن کابینہ کے دوسرے وزیر کو کورونا ہونے پر قرنطینہ منتقل کر دیا گیا۔