تیسری مرتبہ جبری لاپتہ ممتاز کی بازیابی کیلئے انسانی حقوق کے ادارے کردار ادا کریں۔ اہلخانہ

205

ممتاز بلوچ ولد محمد مراد جو کہ مشکے نوکجو کے رہائشی ہے جنہیں تیسری بار جبری گمشدگی کا نشانہ بنایا گیا ہے۔

ممتاز بلوچ کے اہلخانہ کے مطابق انہیں پہلی بار 2016 میں جبری لاپتہ کیا گیا اور 6 ماہ بعد چھوڑ دیا گیا پھر نومبر 2017 میں دوبارہ جبری لاپتہ کیا گیا اور دو سال کے بعد جنوری 2020 میں بازیاب ہوگئے اب ممتاز کو تیسری مرتبہ 6 ستمبر 2022 کو خضدار سے جبری لاپتہ کیا گیا ہے جو تاحال لاپتہ ہیں۔

اہلخانہ نے ان کی زندگی کے بارے میں تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ ممتاز بلوچ کی زندگی کو شدید خطرہ لاحق ہے، انسانی حقوق کی تنظیمیں ممتاز ولد محمد مراد کی باحفاظت بازیابی کے لئے کردار ادا کریں۔