عالمی بینک کی جانب سے پاکستان کیلئے 1.1 ارب ڈالر قرض کی منظوری مؤخر

145

عالمی بینک نے پاکستان کے لیے ایک ارب 10 کروڑ ڈالر کے 2 قرضوں کی منظوری ملک میں توانائی کے قرضوں اور ٹیرف کے حوالے سےکچھ اقدامات کے سبب اگلے مالی سال تک مؤخر کر دی ہے۔

خبر رساں ایجنسی رائٹرز کی رپورٹ میں بتایا گیا کہ وزارت خزانہ کے ذرائع نے نام ظاہر کرنے سے انکار کردیا کہ وہ میڈیا سے باتکرنے کے مجاز نہیں ہیں، کہا کہ قرضوں کی منظوری جون سے زیر التوا ہے۔

رپورٹ کے مطابق اہم مسئلہ توانائی کے شعبے میں گردشی قرضے کی منیجمنٹ اور ٹیرف پر نظرثانی کا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ یہ اقدامات ہماری طرف سے زیر التوا ہیں، عالمی بینک اور وزارت خزانہ نے اس حوالے سے فوری طور پر کوئی ردعملنہیں دیا۔

پاکستان اب بھی تباہ کن سیلاب کی وجہ سے مشکلات سے دوچار ہے، جس سے 30 ارب ڈالر سے زیادہ کا نقصان ہوا ہے۔

اسٹیٹ بینک آف پاکستان کے پاس موجود زرمبادلہ کے ذخائر رواں ماہ کے آغاز میں کم ہر کر 4 ارب 30 کروڑ ڈالر پر آگئے، جس سےبمشکل 3 ہفتوں کی درآمدات ہو سکتی ہے۔