کوئٹہ حملے میں قابض پاکستانی فوج کے 6 اہلکار ہلاک کردیئے – بی ایل اے

680

بلوچ لبریشن آرمی کے ترجمان جیئند بلوچ نے میڈیا کو جاری کردہ بیان میں کہا ہے کہ بی ایل اے کے کے سرمچاروں نے کوئٹہ کےعلاقے زرغون میں ایک حملے میں قابض پاکستان فوج کے ایک قافلے کو نشانہ بناکر دشمن فوج کے چھ اہلکار ہلاک اور صوبیدارسمیت چار اہلکار زخمی کردیئے۔

انہوں نے کہا کہ قابض فوج 21 اکتوبر 2022 کو زرغون، مارگٹ، بولان و ہرنائی کے مختلف علاقوں میں جارحیت کا آغاز کیئے ہوئے ہے۔اسی اثناء گذشتہ روز زرغون گھاٹ کے مقام پر بی ایل اے کے اسپیشل ٹیکٹیکل آپریشنز اسکواڈ (ایس ٹی او ایس) نے بروقت کاروائیکرتے ہوئے اس وقت گھات لگاکر دشمن پر حملہ کیا جب انکی دس گاڑیوں کا قافلہ علاقے سے گذر رہا تھا۔

انہوں نے مزید کہا کہ حملے میں دشمن فوج کے چھ اہلکار ہلاک اور صوبیدار اختر جان سمیت چار اہلکار زخمی ہوگئے جبکہ بھاریہتھیاروں کی زد میں آنے سے دشمن کی دو گاڑیاں تباہ ہوگئیں۔

ترجمان نے کہا کہ بلوچ لبریشن آرمی اس حملے کی ذمہ داری قبول کرتی ہے۔ قابض فوج کے انخلاء تک ہمارے حملے شدت کیساتھجاری رہینگی۔