بلوچ فدائین نے قومی مزاحمتی جنگ کو ایک نئی سمت دی ۔ بی آر جی

649

بلوچ ریپبلکن گارڈز کے ترجمان دوستین بلوچ نے میڈیا کو جاری کردہ بیان میں کہا ہے کہ نوشکی اور پنجگور میں قابض پاکستانی فوج کے ہیڈکوارٹرز پر فدائی حملوں میں حصہ لینے والے بلوچ نوجوان یونٹ کمانڈر حامد رحیم عرف زبیر، یونٹ کمانڈر بادل بلوچ عرف ریاست، جمال عرف چاچا، میرین جمالدینی عرف زگرین، ناسر امام عرف حمل، انیل بلوچ عرف بالاچ، سمیع سمیر عرف شعیب، عزیز زہری عرف بارگ، الیاس بلوچ عرف قادر، یاسر نور عرف سیف، اسد واھگ عرف سبزو، مُراد آجو عرف بابا، ضمیر بلوچ عرف فراز، ابراھیم عرف کبیر، بلال بلوچ عرف واھد جان، دیدگ بہار عرف رؤف کو خراج عقیدت او سرخ سلام پیش کرتی ہے۔

انہوں نے کہا ہے کہ آج ہمیں بہت فخر ہے ان نوجوانوں پر جنہوں نے اپنی مادر وطن کے لئے جانوں کا نذرانہ پیش کیا۔

انہوں نے کہا کہ ایک تاریخی مزاحمت میں بلوچ وطن کے فدائین نے قومی مزاحمتی جنگ کو ایک نئی رخ دیا، بلوچ فرزندان جس جذبے کے ساتھ قبضہ گیر کے خلاف تاریخی مزاحمت میں مصروف عمل ہیں دشمن کو بلوچ سرزمین سے نکالنے کیلئے اور قومی مزاحمت میں فدائی حملوں کو ایک موثر طریقہ مزاحمت سمجھتے ہوئے بلوچ ری پبلکن گارڈز بی ایل اے مجید بریگیڈ کی فدائین کو سرخ سلام پیش کرتا ہے۔