یورپی یونین کا طالبان کے ساتھ مشروط تعاون پر آمادگی کا اظہار

170

 

برسلز میں پریس کانفرنس کے دوران یورپین ممالک کے نمائندہ خارجہ امور جوزف بوریل نے طالبان کے ساتھ مشروط تعاون پر آمادگی ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ اگر طالبان بنیادی انسانی اور خواتین کے حقوق کا احترام کرنے سمیت افغان سرزمین کسی بھی دوسرے ملک کے خلاف دہشت گردی کے لیے استعمال نہ کرنے دیں تو یورپی یونین طالبان کے ساتھ تعاون کے لیے تیار ہے۔

جوزف بوریل کا کہنا تھا کہ میں نے یہ نہیں کہا کہ ہم طالبان کو تسلیم کرنے جارہے ہیں تاہم خواتین کی حفاظت سمیت ہر چیز کے لیے طالبان سے بات کرنا پڑے گی، طالبان جنگ جیت چکے ہیں لہذا ہمیں ان سے بات کرنا پڑے گی اور کابل انتظامیہ سے جڑے رہنا ہوگا۔

جوزف بوریل نے کہا کہ افغانستان میں طالبان کے اقتدار میں آنے سے عالمی جغرافیائی توازن پر گہرا اثر پڑے گا لہذا میں ہمیں اب پاکستان، ترکی، ایران، روس اور چین کے ساتھ مل کر مزید کام کرنا ہوگا۔