راشد حسین کے گھر پر چھاپہ اور لواحقین پر تشدد، کل کوئٹہ میں احتجاجی مظاہرہ ہوگا – وی بی ایم پی

373

وائس فار بلوچ مسنگ پرسنز کے وائس چیئرمین ماما قدیر بلوچ نے لاپتہ راشد حسین کے رشتہ داروں کے گھروں پر چھاپے اور گھر والوں پر تشدد اور راشد حسین کے بہنوئی کی جبری گمشدگی کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے –

ان خیالات کا اظہار ماما قدیر بلوچ نے وی بی ایم پی کے احتجاجی کیمپ میں کیا۔ بلوچ لاپتہ افراد کیلئے احتجاج کو 4395 دن مکمل ہوگئے۔ نیشنل پارٹی نصیر آباد ڈویژن کے صدر استاد عرض محمد عمرانی اور میر عبدالغفار قمبرانی نے کیمپ کا دورہ کیا۔

ماما قدیر بلوچ کا کہنا تھا کہ لاپتہ افراد کے لواحقین کے ساتھ ایسے حرکات کا مطلب انہیں اپنے احتجاج سے روکنا ہے، راشد حسین کے گھر والوں پر تشدد اور ان کے رشتہ داروں کی جبری گمشدگی کے خلاف وائس فار بلوچ مسنگ پرسنز بھرپور آواز اٹھائے گی-

ماما قدیر بلوچ نے کہا کہ راشد حسین کے گھر پر چھاپے کے خلاف کل بروز اتوار چار بجے کوئٹہ پریس کلب کے سامنے احتجاجی مظاہرہ کیا جائے-

ماما قدیر بلوچ کا مزید کہنا تھا ایمنسٹی انٹرنیشنل اور اقوام متحدہ پاکستان کی بلوچستان میں انسانی حقوق کے پامالیوں پر دباؤ ڈالیں-

ماما قدیر بلوچ نے کوئٹہ میں موجود طلباء دیگر سیاسی و انسانی حقوق کے کارکنان سے کل چار بجے احتجاجی مظاہرے میں شریک ہونے کی درخواست کی ہے –