ہوشاپ: پاکستانی فورسز کے اہلکاروں کے ہاتھوں 10 سالہ بچہ جنسی زیادتی کا شکار

2601

بلوچستان کے ضلع کیچ میں پیرا ملٹری فورس ایف سی کے اہلکاروں نے ایک کمسن بچے کو جنسی زیادتی کا نشانہ بناکر بے ہوشی کی حالت میں پھینک دیا۔

مقامی ذرائع کے مطابق بدھ کے روز فرنٹیئر کور (ایف سی) کے اہلکاروں نے کیچ کے تحصیل ہوشاب سے 10 سالہ بچے کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا جس کے باعث اس کی حالت غیر ہوگئی، بچے کو بے ہوشی کی حالت میں تربت اسپتال منتقل کیا گیا۔

بچے کی شناخت مراد امیر کے نام سے ہوئی ہے جو ہوشاپ گریڈ بازار کا رہائشی ہے۔ علاقائی ذرائع کے مطابق بچے سے زیادتی کا واقعہ اس وقت پیش آیا جب وہ جنگل کی جانب گیا تھا۔

مقامی افراد نے واقعے کے خلاف احتجاج کرتے میں ہوشاپ میں شاہراہ کو بلاک کر دیا۔

واضح رہے کہ بلوچستان میں انسانی حقوق کی تنظیمیں اور بلوچ قوم پرست اکثر بلوچستان میں تعینات ایف سی، پیراملٹری فورس پر انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کے مرتکب ہونے کا الزام لگاتے رہے ہیں۔

اس سے قبل ایف سی پر لوگوں کو اغواء اور لاپتہ کرنے کے علاوہ لوگوں کو قتل کرنے کے الزام متواتر لگائے جاتے رہے ہیں۔