چمن: سرحد کی بندش، احتجاجی دھرنا 5 ہفتوں سے جاری

93

چمن میں پاکستان افغانستان سرحد کی بندش کے خلاف احتجاجی دھرنا 36 ویں روز بھی جاری ہے۔

چمن میں احتجاجی دھرنےکی وجہ سے تجارتی سرگرمیاں مکمل طور پر معطل ہوگئی ہیں۔ دھرنے کے شرکاء نے پاکستان افغانستان سرحد کو پہلے کی طرز پر کھولنے کا مطالبہ کیا ہے۔ شرکاء نے پاسپورٹ اور ویزے کی شرط کو مسترد کردیا ہے۔

پاکستان افغانستان سرحد پر دھرنا مختلف سیاسی جماعتوں، تاجروں اور انجمن تاجران کی جانب سے دیا گیا ہے۔

چمبر آف کامرس کا کہنا ہے کہ افغانستان کے ساتھ تجارت کی بندش سے روزانہ کروڑوں روپے کا نقصان ہورہا ہے۔