ایران نے بلوچستان کو بجلی کی فراہمی بند کردی

518

پاور ڈویژن کے حکام نے انکشاف کیا ہے کہ ایران نے پاکستان کو بجلی کی سپلائی بند کردی ہے۔

(دی بلوچستان پوسٹ)

سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے توانائی کے اجلاس میں بریفنگ کے دوران پاور ڈویژن کے حکام نے یہ انکشاف کیا۔ حکام نے بتایا کہ ایران نے بلوچستان کے مختلف اضلاع کے لیے فراہم کی جانے والی بجلی کو بند کردیا ہے۔

پاور ڈویژن حکام نے کہا کہ ایران میں ہیٹ ویو (گرمی کی لہر) کی وجہ سے بجلی کی قلت پیدا ہوگئی ہے جسے پورا کرنے کے لیے تہران نے دیگر ممالک کو بجلی کی برآمد روک دی ہے۔ ایران پاکستان کو 100 میگاواٹ بجلی سپلائی کرتا ہے اور یہ بجلی بلوچستان کے علاقوں گوادر، پنجگور، پسنی اور مکران سمیت اطراف میں تقسیم کی جاتی ہے۔

اجلاس میں حکام نے مزید بتایا کہ کراچی الیکٹرک کو 650 میگاواٹ بجلی فراہم کی جارہی ہے اور بجلی کی خرید و فروخت کے نئے معاہدے سے متعلق معاملات طے پائے جاچکے ہیں۔

واضح رہے ایران سے متصل بلوچستان کے مختلف علاقوں میں گزشتہ ایک مہینے کے زائد عرصے سے بجلی کی بدترین لوڈشیڈنگ کی جاری ہے جہاں دو سے تین گھنٹے بجلی فراہم کی جارہی ہے جس کی وجہ معمولات زندگی متاثر ہوئے ہیں۔

جبکہ لوڈشیڈنگ کے خلاف گوادر، اورماڑہ اور تربت سمیت مختلف علاقوں میں احتجاجی مظاہرے بھی کئے گئے ہیں۔