امریکہ نے جوابی کارروائی کی تو دبئی اور حیفہ کو برباد کردیں گے – ایران

630

جوابی کارروائی پر ایران کا امریکہ کومزید حملوں کی دھمکی ۔

 ٹی بی پی کو موصولہ اطلاعات کے مطابق ایران کے  پاسداران انقلاب کی جانب سے جوابی کارراوائی کرنے پر امریکہ کو  دھمکی دی گئی ہے۔

ایران کے سرکاری ٹی وی پر  جاری ایک بیان میں کہا گيا کہ امریکہ کو اب معلوم ہے کہ اس کے فوجی اڈوں کو ایران نشانہ بنا سکتا ہے۔ اگر امریکہ نے عراق میں میزائل حلموں کے خلاف جوابی کارروائی کی تو پھر امریکی اڈوں کو نشانہ بنایا جا ئےگا۔

ایرانی صدر حسن روحانی کے ایک مشیر حشام الدین اشینا نے بھی خبردار کیا اور کہا ہے کہ اگر امریکہ نے اس پر کوئی جوابی کارروائی کی تو اس سے خطے میں جنگ چھڑ سکتی ہے، امریکہ کی جانب سے اب کوئی بھی جوابی کارروائی پورے خطے میں جنگ کا باعث ہوگی، حالانکہ سعودی عرب دوسرا راستہ اختیار کر کے پوری طرح پر امن رہ سکتا ہے۔

ایران نے دبئی اور حیفہ پر بھی حملے کی دھمکی دی ہے۔ اس سے متعلق ایک ٹوئیٹ میں کہا گيا ہے کہ اگر امریکہ نے ایرانی میزائل حملے پر جوابی اقدمات کیے تو ایران اپنے  تیسرے حملے میں دبئی اور اسرائیلی شہر حیفہ کو پوری طرح سے برباد کر دے گا۔

 دوسری جانب جاپانی میڈیا کے مطابق وزیراعظم شینزو آبے، جو سعودی عرب، متحدہ عرب امارات اور عمان کا دورہ کرنے والے تھے، ممکن ہے کہ اپنا دورہ منسوخ  کر دیں، وہ خلیج میں پیدا ہونے والی اس نئی صورت حال کے بارے میں سکیورٹی حکام سے میٹنگ کرنے والے ہیں۔

ادھر فلپائن نے خطے میں کشیدگی کے سبب اپنے شہریوں کے تحفظ کے حوالے سے تشویش کا اظہار کیا ہے اور انہیں عراق سے فوری طور پر نکل جانے کو کہا ہے۔

ایران کی جانب سے امریکی اڈوں پر حملے کے بعد مختلف شخصیات کی جانب سے رد عمل آنے شروع ہوئے ہیں جس میں امن و امان کو برقرار رکھنے پر زور دیا جا رہا ہے تاہم امریکہ کی حکمت عملی کیا ہوگی یہ صدر ٹرمپ کے بیان سے پتہ چلے گا۔