بی ایل ایف نے بارکھان میں حملوں کی ذمہ داری قبول کرلی

491

بلوچستان لبریشن فرنٹ نے بارکھان میں پاکستانی فوج کی گاڑی پر بم حملے اور مواصلاتی ٹاور کو تباہ کرنے کی ذمہ داری قبول کرلی۔

بلوچستان لبریشن فرنٹ کے ترجمان میجر گہرام بلوچ نے میڈیا کو جاری کردہ بیان میں کہا ہے کہ سرمچاروں نے بارکھان میں قابض پاکستانی فوج کے قافلے کو بارودی سرنگ دھماکے میں نشانہ بنایا۔

انہوں نے کہا کہ بلوچستان لبریشن فرنٹ کے سرمچاروں نے یکم جون 2024 کو بارکھان کے علاقے بوڑی ایشانی میں قابض پاکستانی فوج کے ایک قافلے کو بارودی سرنگ دھماکے سے نشانہ بنایا جس کی زد میں دشمن کا ایک گاڑی آیا۔ دھماکے میں گاڑی کو کافی نقصان پہنچا اور گاڑی میں سوار متعدد فوجی اہلکار زخمی ہوئے۔

انہوں نے کہا کہ بلوچستان لبریشن فرنٹ قابض فوج پر حملے کی ذمہ داری قبول کرتی ہے اور بلوچ قوم، بالخصوص بارکھان کے بہادر بلوچوں سے اپیل کرتی ہے کہ سرکاری سردار اور اس کے نام نہاد مخالفین کی چپقلش میں فریق نہ بنیں بلکہ پاکستانی جبری قبضہ کے خلاف قومی آزادی کی تحریک کو کامیابی کی منزل تک پہنچانے کیلئے اپنے قومی فوج بی ایل ایف کے صفوں میں شامل ہوں اور جو شامل نہیں ہوسکتے وہ سرمچاروں کی حمایت و مدد کریں۔

ترجمان نے ایک اور بیان میں کہا کہ ہفتے اور اتوار کی درمیانی شب بی ایل ایف کے سرمچاروں نے بارکھان کے علاقے ایشانی زکریا جاندری کے مقام پر یوفون کمپنی کے ٹاور پر فائرنگ کرکے ناکارہ کرنے کے بعد اس کے مشینریز کو آگ لگاکر تباہ کیا ہے۔