بولان میں ساتویں روز آپریشن جاری، آمد و رفت کے راستے بند

861

بلوچستان کے علاقے بولان میں آج ساتویں روز پاکستان فوج کی آپریشن جاری ہے، فوج نے آمد و رفت کی تمام راستے بند کردیئے، متعدد افراد علاقوں میں محصور

پاکستان فوج آج ساتویں روز بھی بلوچستان کے علاقے بولان اور اس سے متصل سبی و ہرنائی کے علاقوں میں فوجی آپریشن کررہی ہے۔ فوج نے مختلف مقامات پر عارضی کیمپ قائم کرکے آمد و رفت کے تمام راستوں کو بند کردیا جس کے باعث متعدد افراد علاقوں میں محصور ہوچکے ہیں۔

سات روز سے جاری آپریشن کے باعث لوگوں کو اشیاء خورونوش کے حصول میں مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہا ہے۔

علاقائی ذرائع نے ٹی بی پی کو بتایا کہ کے سبی و ہرنائی کے متعدد مقامات سمیت بولان کے علاقوں میں بدستور فوج موجود ہیں جہاں توپ خانے سے گولہ باری سمیت مارٹر گولے فائر کیئے جارہے ہیں۔

علاقائی ذرائع کا کہنا ہے کہ بارشوں و برف باری کے بعد علاقائی افراد ادویات سمیت دیگر ضرورت کی اشیاء خریدنے شہروں تک نہیں جا پارہے ہیں۔

دوران آپریشن گذشتہ دنوں فورسز نے بولان سے متصل علاقے شابان میں متعدد خواتین و بچوں کو اپنے حراست میں لیا جو تاحال رہا نہیں کیئے گئے ہیں جبکہ گلہ بانی سے منسلک مذکورہ افراد کے گھروں کو نذرآتش کیا گیا۔

اسی طرح سبی و بولان کے درمیانی علاقے میں فوج نے جنگلات کو بھی نذرآتش کردی ہے۔

پاکستانی عسکری حکام نے سات روز سے جاری آپریشن کے حوالے سے تاحال کسی قسم کی تفصیلات فراہم نہیں کی ہے۔