بلوچستان: ایک شخص جبری لاپتہ، 5 بازیاب

298

بلوچستان کے ضلع قلات سے ایک شخص جبری لاپتہ جبکہ ضلع گوادر کیچ اور مستونگ سے پاکستانی فورسز کے ہاتھوں جبری لاپتہ 5 افراد بازیاب ہوکر گھروں کو پہنچ گئے۔

تفصیلات کے مطابق قلات سے پاکستانی فورسز نے ایک شخص کو حراست میں لینے کے بعد لاپتہ کردیا ہے۔

عیدو ولد حیات خان سکنہ نرمک قلات کو منگچر کے مقام سے جبری لاپتہ کیا گیا۔

گوادر سے آمد اطلاعات کے مطابق پاکستانی فورسز کے ہاتھوں لاپتہ ہونے والے دلجان، شاہ حسین اور یاسر بازیاب ہوکر گھر پہنچ گئے ۔ تینوں کو رات گئے سُربندن کے قریب چھوڑ دیا گیا۔

تربت سے ایک نوجوان صابر ولد عبدالحمید گزشتہ شب بازیاب ہو کر گھر پہنچ گیا ہے۔ لواحقین نے انکی بازیابی کی تصدیق کی ہے۔

دریں اثنا مستونگ کے نواحی علاقہ سر نوزہ کانک سے 15 روز قبل لاپتہ ہونے والا نصیب اللہ بنگلزئی ولد عبدالکریم بنگلزئی بازیاب ہو کر اپنے گھر پہنچ گیا۔

بلوچستان میں جبری گمشدگیوں اور جعلی مقابلوں لاپتہ افراد کو قتل کرنے کیخلاف لانگ مارچ کی جارہی ہے۔ آج مارچ کے شرکاء خضدار سے کوئٹہ کی طرف روانہ ہونگے۔