یروشلم: مسلح حملے میں دو افراد ہلاک، متعدد زخمی

109

اسرائیلی پولیس نے بتایا کہ جمعرات کو یروشلم کے داخلی راستے پر دو فلسطینی حملہ آوروں نے صبح کے رش کے وقت ایک بس اسٹاپ پر فائرنگ کی جس میں کم از کم دو افراد ہلاک اور آٹھ زخمی ہو گئے۔

اسرائیلی پولیس نے کہا، “دو دہشت گرد آتشیں اسلحے سے لیس ایک گاڑی میں جائے وقوعہ پر پہنچے، ان دہشت گردوں نے بس اسٹیشن پر شہریوں پر فائرنگ کی اور بعد میں سیکیورٹی فورسز اور ایک قریبی شہری نے انہیں بے اثر کر دیا۔”

یروشلم پولیس کے ضلعی کمانڈر ڈورون ٹورجمین نے جائے وقوعہ پر صحافیوں کو بتایا کہ حملہ آور مشرقی یروشلم سے آئے تھے۔

ایمبولینسوں اور پولیس کی ایک بڑی تعداد اس سڑک پر جمع ہوگئی جو صبح کے وقت آنے والے مسافروں کے ہجوم سے بھری ہوئی تھی اور پولیس نے کہا کہ وہ اس بات کو یقینی بنانے کے لیے علاقے کی تلاشی لے رہے تھے کہ کوئی دوسرا حملہ آور نہ ہو۔

اسرائیل میں امریکی سفیر نے فائرنگ کی مذمت کی ہے۔

سفیر جیک لیو نے کہا “آج صبح یروشلم میں قابلِ کراہت دہشت گردانہ حملہ ہوا۔ ہم واضح طور پر اس طرح کے وحشیانہ تشدد کی مذمت کرتے ہیں۔”

یہ پرتشدد واقعہ اس وقت ہوا جب اسرائیل اور حماس نے جمعرات کو غزہ میں چھ روزہ جنگ بندی میں مزید ایک دن کی توسیع کرنے کے لیے آخری لمحات میں معاہدے پر اتفاق کیا تاکہ مذاکرات کار فلسطینی قیدیوں کے بدلے ساحلی علاقے میں قید یرغمالیوں کے تبادلے کے معاہدے پر کام جاری رکھ سکیں۔