زہری سے نوجوان جبری لاپتہ

229

بلوچستان کے ضلع خضدار کے علاقے زہری سے پاکستانی فورسز اور خفیہ اداروں نے ایک نوجوان کو جبری طور پر لاپتہ کردیا۔

زہری کے علاقے کہن سے گذشتہ روز ایک بجے کے قریب پاکستانی فورسز اور خفیہ اداروں کے اہلکاروں نے ایک نوجوان لیاقت ولد صالح محمد کو اس وقت جبری طور پر لاپتہ کیا جب وہ اپنے پرچون کے دکان میں بیٹھا تھا۔

عینی شاہدین کے مطابق یک بوزی، زہری کے رہائشی نوجوان کو جبری لاپتہ کرنے کے وقت پاکستانی فورسز کے اہلکاروں نے علاقے کا گھیراؤ کیا جبکہ اس موقع پر ان کے ہمراہ سادہ کپڑوں میں خفیہ اداروں کے اہلکار بھی موجود تھے۔

چوبیس گھنٹے گذرنے کے بعد بھی ضلعی حکام نے تاحال اس حوالے سے کوئی تفصیلات فراہم نہیں کی ہے۔

دریں اثناء گذشتہ روز لمز یونیورسٹی اوتھل سے جبری لاپتہ نوجوان سمیر بلوچ تاحال بازیاب نہیں ہوسکے ہیں۔

لمز یونیورسٹی سیکنڈ ایئر کے طالب علم سمیر بلوچ کو گذشتہ روز اس وقت پاکستانی خفیہ اداروں کے اہلکاروں نے یونیورسٹی سے جبری لاپتہ کیا جب طلباء اپنے مطالبات کے حق میں دھرنا دے رہے تھے۔