بلوچستان: 250 روڈ حادثات میں 826 متاثرہ خاندان | تیسری سہ ماہی رپورٹ

93

دی بلوچستان پوسٹ کی ڈیٹا ویژول اسٹوڈیو کے اعداد شمار کے مطابق 2023 کی تیسری سہ ماہی میں بلوچستان بھر میں ٹریفک حادثات کے باعث 826 خاندان متاثر ہوئے جبکہ رپورٹ ہونے والے حادثات کی تعداد 250 ہے۔

بلوچستان میں ٹریفک حادثات تسلسل کیساتھ رونماء ہورہے ہیں، روزانہ مختلف نوعیت کے ٹریفک حادثات میں کئی افراد زخمی ہورہے ہیں وہی ایک بڑی تعداد میں لوگوں کی جانیں بھی ضائع ہوتی ہیں۔

تیسری سہ ماہی رپورٹ کے مطابق گذشتہ تین مہینوں میں ٹریفک حادثات میں مزید اضافہ ہوا ہے۔

اعداد و شمار کے مطابق مذکورہ حادثات میں 224 سے زائد افراد لقمہ اجل بن گئے جبکہ 602 سے زائد افراد زخمی ہوگئے۔

سب سے زیادہ متاثرہ علاقوں میں خضدار میں 36 حادثات، کوئٹہ میں 31 حادثات، مستونگ میں 29، بولان میں 22 اور حب میں 16 حادثات رپورٹ ہوئے جبکہ گوادر میں 15، ژوب میں 10، لورالائی میں 9 اور واشک میں 6 روڈ حادثات رپورٹ ہوئے۔

بلوچستان میں رونماء ہونے والے حادثات کی وجوہات میں گاڑیوں کی خستہ حالی، اوور لوڈنگ، کمزور مرئیت، ڈرائیوروں کی درست تربیت نا ہونا اور ڈرائیونگ لائسنس کا نہ ہونا، تیز رفتاری اور لاپروائی، لمبے سفر کے باعث نیند کی کمی اور منشیات کا استعمال شامل ہیں۔

ان وجوہات میں خستہ حال سڑکیں، تنگ اور سنگل لائن شاہراہیں، روڈ سیفٹی اور نیویگیشن اشارے کا فقدان شامل ہیں جبکہ بلوچستان میں کوئی ٹریفک انجنیئر موجود نہیں ہے۔

 ٹی بی پی ڈیٹا ویژول اسٹوڈیو نے روڈ حادثات کو انفوگرافکس کی صورت میں واضح کیا ہے: