کراچی: پولیس کا بی ایل ایف ارکان کی گرفتاری کا دعویٰ

795

کراچی پولیس نے بلوچ آزادی پسند مسلح تنظیم بلوچستان لبریشن فرنٹ سے تعلق رکھنے والے دو افراد کو گرفتار کرنے کا دعویٰ کیا ہے۔

ایس ایس پی ملیر نے کراچی میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ پولیس نے کارروائی کرتے ہوئے بی ایل ایف کے دو کارکنان کو گرفتار کیا ہے۔

پولیس کے مطابق گرفتار افراد ایران میں مقیم علی حسن سانگو نامی بی ایل ایف کے کمانڈر سے رابطے میں تھے اور انہوں نے چینی باشندوں پر حملے کے لیے ریکی مکمل کرلی تھی۔

ایس ایس پی ملیر نے کہا کہ دونوں کارکنوں کو علی حسن سانگو نے 45 دستمی بم اور 80 ہزار روپے دیے تھے۔

انہوں نے کہا گرفتار افراد نے شاہ لطیف ٹاﺅن میں پولیس موبائل پر دستی بم حملہ کیا تھا، دستی بم حملے کی ذمہ داری بی ایل ایف نے قبول کی تھی۔

انہوں نے کہا کہ گرفتار افراد شاری بلوچ کی برسی پر کارروائی کی منصوبہ بندی کی تھی جنہیں دو روز بعد تربت نکلنا تھا اور 26 کو واپس آنا تھا۔

پولیس کا کہنا تھا علی حسن سانگو ایران میں روپوش ہے۔ تاہم بلوچستان لبریشن فرنٹ کا موقف اس حوالے سے تاحال سامنے نہیں آیا ہے۔