ایران میں اسکول طالبات پر جاری زہرخورانی کے پُراسرارحملوں کے خلاف مظاہرے

266

ایران کے مختلف صوبوں میں ہفتے کے روز اسکول طالبات کو زہر دیا گیا ہے جس کے نتیجے میں دسیوں طالبات کو اسپتال میں داخل کیا گیا ہے۔ طالبات کو زہرخورانی کے واقعات کے خلاف دارالحکومت تہران میں مظاہرے کیے جارہے ہیں۔ شہریوں نے ممکنہ طور پر حکومت پر ان حملوں میں ملوث ہونے کا الزام عائد کیا ہے اور ان کی مذمت کی ہے۔

نومبر سے اب تک ایران بھرمیں لڑکیوں کے درجنوں اسکولوں میں زہریلے مواد سے حملے کیےگئے ہیں جس کی وجہ سے سیکڑوں لڑکیاں بیمار پڑگئی ہیں۔ حکام نے ابتدائی طور پران واقعات کو مسترد کر دیا تھا لیکن حال ہی میں اس مسئلہ کی شدت کو تسلیم کیا ہے۔

طالبات کی طرف سے بیان کردہ علامات میں سردرد، دل کی دھڑکن میں تیزی، نقاہت، اور حرکت کرنے میں ناکامی شامل ہیں، کچھ لوگوں نے غیر معمولی خوشبوؤں جیسے ٹینجرین، کلورین، یا صفائی کے لیے استعمال ہونے والے مواد کو سُونگھنے کے بارے میں بھی بتایا ہے۔