بلوچ یکجہتی کمیٹی نے سیلاب زدگان کے لئے امداد سامان کا دوسرا کھیپ بیلہ روانہ کردیا

48

بلوچ یکجہتی کمیٹی کراچی کے رضاکاروں نے بدھ کی صبح پانچ بجے امدادی سامان کی دوسری کھیپ بلوچستان کے ضلع لسبیلہ کے علاقے وندر، لاکھڑا، لیاری سمیت دیگر علاقوں میں روانہ کردی۔ جس میں راشن، کمبل، ادوایات، لحاف، اور دیگر اشیا شامل ہیں جبکہ بدھ کے روز پہلی کھیپ لے جانے والے رضا کار متاثرین میں امدادی تقسیم کرنے میں مصروف ہیں۔

بدھ کی صبح ڈی سی لسبیلہ مراد کانسی نے بلوچ یکجہتی کمیٹی کراچی کی آرگنائزر آمنہ بلوچ سے ٹیلی فون پر رابطہ کیا اور انہیں ضلع لسبیلہ کی صورتحال پر آگاہ کرتے ہوئے ڈی سی لسبیلہ مراد کانسی نے کہا کہ دوسری امدادی کھیپ کو اوتھل تک پہنچادیں کیونکہ آگے سڑکیں بہہ گئیں، اور زمینی راستہ تاحال بحال نہیں ہوا۔

واضع رہے کہ پہلی کھیپ کے ٹرکوں کو کچھ علاقوں میں سڑکیں بہہ جانے سے امدادی سامان سے بھرے ٹرک پھنس گئے تھے۔

بلوچ یکجہتی کمیٹی کراچی کی آرگنائزر آمنہ بلوچ نے بلوچستان حکومت کی جانب سے بلوچ یکجہتی کمیٹی کراچی کے رضاکاروں کے ساتھ تعاون کرنے پر ان کا شکریہ ادا کیا۔

بلوچ یکجہتی کمیٹی کراچی کی آرگنائزر آمنہ بلوچ نے کہا کہ جاری طوفانی بارشوں نے بلوچستان میں تباہی مچادی ہے۔ اور اس مشکل وقت میں متاثرین کا ساتھ نہیں چھوڑیں گے۔ ان کی مدد کے لئے ہر ممکن کوشش کرینگے۔

آمنہ بلوچ نے مخیر حضرات کو بلوچستان میں سیلاب زدگان کی مدد کی اپیل کرتے ہوئے کہا کہ وہ زیادہ سے زیادہ امدادی عمل کا حصہ بنیں اور تاکہ اس مشکل گھڑی میں ان کے دکھ درد میں شامل ہوسکیں۔

انہوں نے حکومت پر زور دیتے ہوئے کہا کہ اس وقت حکومت کی یہ ذمہ داری بنتی ہے کہ وہ سیلاب زدگان کی بھرپور مدد کریں کراچی کے مختلف علاقوں میں امدادی کمیپس پانچویں روز بھی قائم ہیں۔