بلوچستان: سیلاب اور بارش، 12 افراد جانبحق

86
فائل فوٹو

بلوچستان کے مختلف اضلاع میں حالیہ دنوں ہونے والے سیلابی بارشوں کی وجہ بارہ افراد جانبحق اور اکیس زخمی ہوئے ہیں، جانبحق ہونے والوں میں آٹھ خواتین اور بچے بھی شامل ہے۔

قدرتی آفات سے نمٹنے کے صوبائی ادارے پراونشل ڈیزاسسٹر مینجمنٹ اتھارٹی (پی ڈی ایم اے)کے حکام کے مطابق ضلع ہرنائی کے علاقے اسپین تنگی میں سیلابی ریلہ دو خواتین اور ایک بچی سمیت تین افراد کو بہا کر لے گیا تھا، جن میں سے بچی کی لاش مل گئی جبکہ دو خواتین لاپتہ ہیں۔

حکام نے بتایا کہ ہرنائی میں بارشوں سے چار مکانات اور سنجاوی ہرنائی شاہراہ کو نقصان پہنچا ہے۔ اس کے علاوہ دو پل اور ایک کلومیٹر ریلوے ٹریک بھی کچھ متاثر ہوا ہے جبکہ بارشوں نے فصلوں کو بھی نقصان پہنچایا ہے۔

پی ڈی ایم اے کے اعداد وشمار کے مطابق 20 جون سے ہونے والی بارشوں اور سیلاب کے باعث مجموعی طور پر اب تک صوبے کے مختلف علاقوں میں نو افراد ہلاک اور 21 زخمی ہوئے ہیں۔

پی ڈی ایم اے کے حکام نے مزید بتایا کہ ڈیرہ بگٹی میں ایک مکان مکمل تباہ جبکہ بارکھان، دکی ہرنائی میں 12 کو جزوی نقصان پہنچا ہے، اسی طرح 366 مال مویشی ہلاک ہوئے ہیں اور 329 سولر پلیٹس کو نقصان پہنچا ہے۔