بی این اے نے آبسر میں حملے کی ذمہ داری قبول کرلی

513

بلوچ نیشنلسٹ آرمی کے ترجمان مرید بلوچ نے بیان جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ سرمچاروں نے 29 مئی بروز اتوار سہ پہر تین بجے کیچ کے مرکزی شہر تربت کے علاقے آبسر میں بوائز سیکنڈری ہائی سکول میں قائم نام نہاد ریاستی بلدیاتی انتخابات کے لیے قائم پولنگ اسٹیشن پر فائرنگ کرکے انتخابی عمل کو نقصان پہنچانے کی کوشش کی اور وہاں سیکیورٹی کےلیے تعینات پولیس اہلکاروں کو بلوچیت کے بنا پر نقصان دینے سے گریز کیا اور انہیں سمجھانے اور تنبیہ کرنے کے بعد وہاں سے نکل گئے۔

انہوں نے کہا کہ ہم یہ واضح کرنا چاہتے ہیں کہ بلوچ اور قابض ریاست پاکستان کا رشتہ صرف اور صرف قابض و مقبوض کا ہے اور بلوچ قوم قابض سے قومی آزادی چاہتی ہے۔ بلوچ عوام سے اپیل ہے کہ وہ ریاست اور اس کے زرخرید گماشتوں کی لالچ اور ڈر کی وجہ سے اس عمل میں شامل ہونے کے بجائے قومی آزادی کے جدوجہد میں شامل ہوکر اس قابض ریاست اور بلوچ نسل کُشی میں ملوث گماشتوں کے خلاف اعلانِ جنگ کریں۔

انہوں نے کہا کہ ہماری مسلح کاروائیاں ایک آزاد وطن کے حصول تک جاری رہینگی۔