رحیم اللہ یوسفزئی انتقال کرگئے

105

بین الاقوامی شہرت یافتہ صحافی و کالم نگار اور ماہر افغان امور رحیم اللہ یوسفزئی انتقال کرگئے۔

رحیم اللہ یوسفزئی کے اہلخانہ کے مطابق مرحوم طویل عرصے سے علیل تھے، ان کی نمازجنازہ کل دن 11 بجے مردان کاٹلنگ انذرگئی نزد سوات ایکسپریس وے کاٹلنگ انٹرچینج کے قریب خان ضمیر بانڈہ میں ادا کی جائے گی۔

رحیم اللہ یوسفزئی 10 ستمبر 1954 کو پیدا ہوئے، انہیں القاعدہ کے سربراہ اسامہ بن لادن کے انٹرویو کی وجہ سے کافی شہرت ملی۔

رحیم اللہ یوسفزئی ان چند صحافیوں میں سے ہیں جنہوں نے طالبان کے کارروائیوں کو رپورٹ کیا اور 1995 میں خود قندھار گئے۔

وہ روزنامہ جنگ کے لیے بطور کالم نگار کام کرتے رہے، اس سے پہلے ٹائم میگزین کے لیے بھی کام کیا جب کہ وہ بی بی سی اردو اور بی بی سی پشتو کے نمائندے بھی رہے۔

مرحوم کی صحافتی خدمات کے اعتراف میں حکومت پاکستان نے انہیں 2004 میں تمغہ امتیاز اور 2009 میں ستارہ امتیاز سے نوازا۔