نوشکی: سمیع مینگل قتل کیس، تین ملزمان کو عمر قید کی سزا

173

سمیع مینگل قتل کیس میں سیشن جج نوشکی کی عدالت نے تین ملزمان کو جرم ثابت ہونے پر عمر قید کی سزا سنا دی۔

سمیع مینگل کو دو سال قبل منشیات کے خلاف احتجاجی تحریک چلانے پر ملزمان نے فائرنگ کرکے قتل کردیا تھا۔

سیشن جج نوشکی نزیر احمد خجک کی عدالت نے سمیع مینگل قتل کیس میں جرم ثابت ہونے پر تین ملزم رحمت اللہ، سمیع اللہ اور محمد علی کو عمر قید کی سزا سنائی جبکہ ملزمان کے والد جان شاہ کو بری کر دیا۔

مدعی کی جانب سے کیس کی پیروی ممتاز قانون دان میر نوروز خان مینگل ایڈووکیٹ اور ڈی پی پی نوروز جوہر نے کی۔

یاد رہے کہ سمیع اللہ جامعہ بلوچستان میں بی ایس زولوجی کے طالب علم تھے سمیع مینگل کے قتل کے خلاف نوشکی اور بلوچستان بھر میں سیاسی و سماجی تنظیموں کے جانب سے احتجاجی مظاہرہ کئے گئے۔

سمیع مینگل کے قتل کے بعد بلوچستان بھر میں منشیات کے خلاف ایک منظم تحریک کا آغاز کیا گیا اور لوگوں نے اپنی مدد آپ کے تحت منشیات فروشوں کے اڈوں کو بند کرکے منشیات بحالی کے سنٹر بھی بنائیں۔