گوادر میں پانی کی قلت برقرار، احتجاج کا سلسلہ جاری

94

بلوچستان کے ساحلی شہر گوادر میں پانی کی شدید بحران کے خلاف عوام کا احتجاج جاری ہے-

پیر کے روز خواتین اور بچوں کی بڑی تعداد نے مولا موسیٰ موڈ پر ٹائر جلا کر کر احتجاجاً سڑک پر دھرنا دیا جس سے ہرقسم کی ٹریفک معطل ہوگئی۔

احتجاجی مظاہرین نے کہا کہ آئے روز احتجاج اور دھرنوں کے باوجود پانی فراہمی پر حکومت کوئی اقدامات نہیں اٹھا رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ شہر میں پانی کی شدید بحران ہے اور شہریوں کی پریشانی حکومت کو نظر نہیں آتی ہے یہاں لوگ پیاس بجھانے کے لئے سراپا احتجاج ہیں اور حکومت ترقی کا ڈھول بجا رہی ہے –

ایک شہری نے کہا کہ حکومت جان بوجھ کر یہاں پانی کا بحران پیدا کررہی ہے تاکہ مقامی لوگ ہجرت کر کے یہاں سے چلے جائیں اور یہاں غیر مقامی لوگوں کی آبادی تیزی سے مکمل کیا جائے –

انہوں نے کہا کہ گوادر میں ہر روز شہری پانی کی قلت کے خلاف سراپا احتجاج ہیں لیکن اس سنگین مسئلہ پر زبانی کلامی کے بجائے عملی طور پر کچھ پیش رفت نہیں ہورہا ہے جس سے حکومت کی نیت پر شک کیا جارہا ہے –

یاد رہے کہ گذشتہ روز بھی شہریوں نے پانی کی حصول کیلئے احتجاج کرکے ٹریفک کی روانی معطل کر دی تھی –