کابل میں جمعہ نماز کے دوران دھماکہ

108

افغانستان کے دارالحکومت کابل کے مسجد میں نماز جمعہ کے دوران دھماکا ہوا ہے۔ امام مسجد سمیت 12 افراد جانبحق ہوئے ہیں۔

پولیس نے واقعہ کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ دھماکے میں امام مسجد سمیت 12 افراد جانبحق ہوئے ہیں جبکہ 15 افراد زخمی ہوئے۔

یہ دھماکہ جمعرات سے طالبان اور حکومتی فوجوں کے درمیان طے پانے والے تین روزہ عارضی جنگی بندی کے اعلان کے بعد ہونے والا پہلا بڑا واقعہ ہے۔

افغان طالبان کے ترجمان ذبیح اللہ مجاہد نے مسجد میں حملے کی مذمت کی ہے۔ خیال رہے کہ عیدالفطر کے موقع دونوں فریقوں نے جنگی بندی کی پاسداری کرنے پر اتفاق کیا تھا۔

گذشتہ ہفتے کابل میں لڑکیوں کے سکول میں باہر ہونے والے سلسلہ وار دھماکوں میں 50 سے زائد افراد جاں بحق ہوگئے تھے جن میں زیادہ تر کم عمر لڑکیاں شامل تھیں۔

امریکا کی جانب سے یکم مئی سے اپنے 2500 بقیہ فوجیوں کے افغانستان سے باضابطہ انخلاء کے بعد حالیہ ہفتوں میں ملک بھر پرتشدد واقعات میں اضافہ ہوا ہے۔