کوئٹہ: بچے کے قتل کا واقعہ، ملزمہ کی 4 روزہ ریمانڈ میں توسیع

45

بچے کے قتل کا دلخراش واقعہ، جوڈیشل مجسٹریٹ  کوئٹہ احترام الحق نے ملزمہ کی جسمانی ریمانڈ میں مزید 4 روز توسیع کردی۔

جمعہ کے روز کوئٹہ کے علاقے سمنگلی روڈ لہڑی گیٹ میں مبینہ طور پر نوکرانی کے ہاتھوں چار سالہ بچے کی دلخراش قتل میں گرفتار ملازمہ کو پولیس نے جوڈیشل مجسٹریٹ کوئٹہ کے روبرو پیش کی گئی جس کے دوران پولیس کی جانب سے ملزمہ کی مزید ریمانڈ کی استدعا کی گئی جس پر جوڈیشل مجسٹریٹ نے ملزمہ کو مزید چار روزہ جسمانی ریمانڈ پر پولیس کے حوالے کردیا ہے۔

واضح رہے کہ ملازمہ کے لواحقین نے بچے کو قتل کرنے کی تردید کرتے ہوئے کہا تھا کہ جب بچہ جاں بحق ہوا تو بچے کے ماموں موجود تھے۔ گرفتاری اس لیے پیش کی گئی تاکہ تمام حقائق کھل کر سامنے آئے، ملازمہ گزشتہ 7 ماہ سے اسی گھر میں کام کرہی تھی، ملازمہ کو اس کیسز میں پھسایا جارہا ہے۔

یاد رہے کہ 12 ستمبر ہفتے کے روز کوئٹہ کے علاقے سمنگلی روڈ لہڑی گیٹ کے قریب رہائشی محمد علی شاہ کے چار سالہ بچہ سعد شاہ کمرے میں مردہ حالت میں پائے گئے تھے۔ مقتول کی والدہ کے شور مچانے پر اہل خانہ کے دیگر افراد آئے اور لاش کو ہسپتال پہنچا دیا گیا بعدازاں والد کی مدعیت میں مبینہ طورپر نوکرانی کے خلاف ایف آئی آر درج کرلی گئی تھی۔

پیر کے روز مبینہ ملزمہ نے اہل خانہ کے دیگر افراد کی موجودگی میں سرنڈر کردیا تھا جس پر پولیس نے ملزمہ کی چار روزہ جسمانی ریمانڈ بھی حاصل کرلیا تھا۔