ڈیرہ بگٹی و جھل مگسسی: فائرنگ سے 3 افراد ہلاک، 1 اغواء

251

ڈیرہ بگٹی و جھل مگسی میں مختلف واقعات میں فائرنگ سے 3 افراد ہلاک و 1 اغواء

دی بلوچستان پوسٹ نیوز ڈیسک کو موصول ہونے والی اطلاعات کے مطابق ضلع ڈیرہ بگٹی اور جھل مگسی میں فائرنگ کے واقعات میں تین افراد ہلاک اور ایک شخص کو مسلح حملہ آوار اغوا کرکے اپنے ساتھ لے گئے۔

تفصیلات کے مطابق ضلع ڈیرہ بگٹی کے تحصیل سوئی کے علاقے اوچ میں میں نامعلوم مسلح افراد نے سونا خان چاکرانی بگٹی کے ٹھکانے پر آتش گیر اسلحے سے حملہ کردیا۔

حملے کے نتیجے میں ایک شخص سانول چاکرانی بگٹی موقعے پر ہلاک ہوگیا جبکہ دوسرے شخص سونا خان چاکرانی بگٹی کو مسلح حملہ آوار اپنے ساتھ لے گئے۔

واضح رہے گذشتہ دنوں ڈیرہ بگٹی کے علاقے دشت گوران میں نامعلوم مسلح افراد نے امن فورس کے کیمپ پر حملہ کیا تھا جس کے نتیجے میں تین اہلکار ہلاک جبکہ ایک زخمی ہوگیا تھا۔

دشت گوران حملے کی ذمہ داری بلوچ لبریشن ٹائیگرز نے قبول کرتے ہوئے کہا تھا کہ مذکورہ افراد ڈیرہ بگٹی کے مختلف علاقوں میں عام بلوچ آبادیوں میں فوجی آپریشن، بلوچ خواتین کے اغوا اور بلوچ مزاحمتکاروں کے مخبری میں براہ راست ملوث تھے۔

سوئی میں ہونے والے حملے کی ذمہ داری تاحال کسی تنظیم نے قبول نہیں کی ہے۔

دریں اثناء بلوچستان کے ضلع جھل مگسی کے تحصیل گنداواہ کے علاقے باڈرہ میں مسلح افراد کی فائرنگ سے دو سگے بھائی جاں بحق ہوگئے۔

تفصیلات کے مطابق گذشتہ شب جھل مگسی کے تحصیل گنداوہ میں مسلح افراد نے زمین کے تنازے پر فائرنگ کر کے دو سگے بھائی امام بخش اور حسین بخش کو قتل کردیا اور موقع سے فرار ہوگئے۔

ریسکیو زرائع کے مطابق دونوں لاشوں کو قریبی ہسپتال منتقل کردیا گیا۔ جہاں ضروری کاروائی کے بعد لاشیں ورثہ کے حوالے کردی گئیں ہیں۔