ایوب بلوچ کو ساتھی سمیت بازیاب کیا جائے – والدہ کی اپیل

117

پسنی کے رہائشی دو افراد ایوب بلوچ اور عجیب بلوچ گذشتہ 20 روز سے لاپتہ ہیں ۔

بلوچستان کے ساحلی علاقے پسنی کے رہائشی ایوب بلوچ ولد مسافر اور عجیب ولد الہی بخش بیس روز قبل پسنی سے تربت جاتے ہوئے لاپتہ ہوئیں ہیں ۔

خاندانی زرائع کے مطابق انہوں نے تربت پولیس سے بھی معلومات حاصل کی لیکن پولیس نے مذکورہ نام کے کسی بھی بندے کے ان کی تحویل میں ہونے سے انکار کردیا ۔

محکمہ فشریز کے ملازم ایوب بلوچ کے بوڑھی والدہ کی ایک ویڈیو سوشل میڈیا پہ شائع ہوئی ہے جس میں وہ اپنے  بیٹے کی رہائی کی اپیل کررہی ہے ۔

ایوب بلوچ کے والدہ کے مطابق ان کا نہ کوئی اور بیٹا ہے اور نہ ہی بیٹی ، بس ایوب اور اس کے دو بچے ہیں ۔

انہوں نے اپیل کی کہ ایوب جن کے پاس بھی قید ہے وہ اسے رہا کردیں ۔

خیال رہے مکران سمیت بلوچستان کے مختلف علاقوں میں پاکستانی فورسز اور خفیہ اداروں کے ہاتھوں جبری گمشدگیوں کا سلسلہ ایک مرتبہ پھر تیز ہوگیا ہے اور مختلف علاقوں سے حالیہ چند ہفتوں کے دوران درجنوں افراد بالخصوص نوجوان طالب علم گرفتاری کے بعد لاپتہ ہوچکے ہیں ۔