نوشکی: منشیات فروشی کے خلاف آواز اٹھانے پر نوجوان قتل

468

نوشکی میں مبینہ طور پر منشیات فروشوں کی فائرنگ سے نوجوان قتل

بلوچستان کے ضلع نوشکی میں مبینہ طور پر منشیات فروشوں کی فائرنگ سے نوجوان طالب علم سمیع اللہ ولد حاجی ثنا اللہ جانبحق ہوگیا۔

ذرائع کے مطابق سمیع اللہ نے گذشتہ دنوں نوشکی میں منشیات فروشی کے خلاف کمشنر رخشان ڈویژن کے سامنے کھلی کچہری میں شکایت کی تھی جس کے باعث انہیں نشانہ بنایا گیا۔

سمیع اللہ جامعہ بلوچستان میں بی ایس زولوجی کے طالب علم تھے۔

دوسری جانب جانبحق نوجوان کے لواحقین نے آج شام قاتلوں کی گرفتاری اور قاضی آباد میں واقعے منشیات کے اڈے کو مسمار کرنے اور فرنٹیئر کور کیمپ کے سامنے احتجاج کا عندیہ دیا ہے۔

ضلعی انتظامیہ کی جانب سے تاحال اس حوالے سے کچھ نہیں بتایا گیا اور نہ ہی قاتلوں کی گرفتاری عمل میں لائی جاسکی ہے۔