کوئٹہ: خودکش حملے میں افغان طالبان رہنماء کو ہلاک کیا – داعش

762
داعش کی جانب سے مبینہ خودکش حملہ آور کی تصویر بھی جاری کی گئی ہے۔

عالمی دہشت گرد تنظیم داعش نے بلوچستان کے دارالحکومت کوئٹہ کے نواحی علاقے غوث آباد میں مسجد میں ہونے والے خودکش حملے کی ذمہ داری قبول کرلی۔

تفصیلات کے مطابق عالمی دہشت گرد تنظیم داعش نے بیان جاری کیا ہے  کہ ان کے ایک مجاہد ابو جراح البلوچی نے آج بلوچستان کے دارالحکومت کوئٹہ کے علاقے غوث آباد میں افغان طالبان کے اہم اجلاس کے دوران خودکش حملہ کیا ہے جس میں مقامی ڈی ایس پی پولیس امان اللہ خان اور افغان طالبان کے اہم رہنماؤں سمیت 20 سے زائد افراد ہلاک جبکہ 40 کے قریب زخمی ہوگئے ہیں۔

دوسری جانب آزاد ذرائع کے مطابق آج ہونے والے خودکش حملے میں افغان طالبان کے اہم رہنما مولوی شیخ عبدالحکیم بھی ہلاک ہوئے ہیں۔

دریں اثناء افغان طالبان کے ترجمان ذبیع اللہ مجاہد نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹیوٹر پر حملے میں اپنے کسی اہم رہنما کی ہلاکت کی تردید کی ہے اور کہا ہے کہ حملے کے وقت کسی بھی قسم کا اہم اجلاس جاری نہیں تھا اس حوالے سے سامنے آنی والی اطلاعات افواہوں پر مبنی ہیں۔