کوئٹہ میں نئے سال کا آغاز کتاب میراث میلے سے ہوگا

170
فائل فوٹو: بی ایس اے سی کی جانب سے رواں سال بلوچستان کے مختلف علاقوں میں بک اسٹالز لگائے گئے۔

پڑو ادبی کچاری کا اجلاس چئیرمین سعید نور کے زیر صدارت قمبرانی روڈ پر منعقد ہوا جس میں ایجنڈے کے مطابق ”کتاب میراث” جہد زیر بحث رہا۔

خیال رہے گذشتہ روز پڑو ادبی کچاری ، نشست آن لائن اور وائی سی ایس ایف کا ایک مشترکہ اجلاس ہوا جس میں بلوچستان کے مختلف علاقوں میں کتاب کلچر کے فروغ، سکولوں کے طلباء و طالبات کی جنرل کتابوں تک رسائی اور غیر نصابی کتابوں میں دلچسپی پیدا کرنے کیلئے عملی اقدام اٹھانے اور ادبی سرگرمیوں کے لئے رابطہ مہم پر تبادلہ خیال ہوا تھا۔ وائی سی ایس ایف ، نشست آن لائن اور پڑو ادبی کچاری کے باہمی تعاون سے کتاب میلہ لگانے کا فیصلہ بھی طے پایا تھا اور کتاب میلے کے وقت اور جگہے کا تعین نہیں ہوسکا تھا جس کے لئے پڑو ادبی کچاری کے چئیرمین سعید نور نے تنظیم کے عہدیداروں اور ممبران کا ایک اجلاس بلایا۔

اجلاس میں ” کتاب میراث ” کے لئے دوستوں کے مشاورت سے 1 جنوری 2020 بروز بدھ ” کتاب میلہ” طے پایا اس عزم کے ساتھ کہ آنے والے ہر سال کا افتتاح جہاں مختلف اقوام مختلف طریقے سے کرتے ہیں ہم اپنے قوم کو یہ پیغام دینگے کہ اس دن کو کتاب میراث، کتاب کلچر سے کریں جبکہ جگہ کیلئے منیر احمد چوک (سریاب روڈ کوئٹہ) کا فیصلہ طے ہوا۔

پڑو ادبی کچاری کے چیئرمین نے اپنے ایک پیغام کے توسط سے کتابوں سے شغف رکھنے والے تمام افراد سے شرکت کی اپیل کی۔ انہوں نے طور پر ادبی تنظیموں کو پیغام دیا کہ وہ بھی ”کتاب میراث جہد” کا حصہ بن کر اپنی اپنی تنظیموں کے مدد سے اس کو کامیاب بنائیں۔