پسنی: غیر قانونی ٹرالنگ عروج پر، جیٹی کی عدم بحالی کے خلاف احتجاج

42

پسنی جیٹی کی عدم بحالی کے خلاف ماہی گیروں کااحتجاج، ریلی اور نعرہ بازی، پسنی کے سمندرمیں غیرقانونی ٹرالنگ عروج پر ہے، جیٹی کی بحالی کے کام کا التواء ایک سازش ہے، پسنی فش ہاربر اتھارٹی کے موجودہ ایم ڈی اور پی ڈی کا فوری طورپر تبادلہ کیاجائے، ماہی گیروں کا مطالبہ

تفصیلات کے مطابق پسنی ماہی گیرویلفیئر سوسائٹی کے زیراہتمام پسنی جیٹی کی عدم بحالی کے خلاف ماہی اور بیوپاریوں نے ایک ریلی نکالی اور احتجاج کیا اور اس دوران نعرہ بازی بھی کی گئی، احتجاجی مظاہرین نے کہا کہ جیٹی کے بحالی کے کام کا التواء پسنی کے ماہی گیروں کے خلاف ایک سازش ہے۔ انہوں نے کہا کہ پسنی جیٹی کی فوری ڈریجنگ ہونا چاہیے لیکن اس سلسلے میں صوبائی حکومت کی خاموشی سوالیہ نشان ہے۔

انہوں نے کہا کہ پسنی فش ہاربر اتھارٹی کے ایم ڈی اور پی ڈی کا فوری طورپر تبادلہ کیا جائے کیونکہ موصوف جب سے ایم ڈی اورپی ڈی تعینات ہوا ہے ایک دن بھی پسنی میں اپنے آفس میں نہیں بیٹھا ہے۔

مظاہرین نے کہا کہ ماہی گیروں کا معاشی قتل کسی بھی طرح قابل قبول نہیں ہے، ایک طرف پسنی جیٹی زبوں حالی کا شکار ہے تو دوسری جانب پسنی کے سمندرمیں غیرقانونی طورپر ٹرالروں کی یلغار نے ماہی گیروں کو نان شبینہ کا محتاج بنادیا ہے۔
ٹرالرمافیا بے لگام ہوچکی ہے ساحل کنارے آکر ٹرالنگ کیا جارہا ہے لیکن انہیں پوچھنے والا کوئی نہیں ہے۔

احتجاجی مظاہرین نے صوبائی حکومت سے مطالبہ کیا کہ پسنی جیٹی کی فوری طور پر ڈریجنگ کی جائے اور اس کے مستقل حل کے لیے ڈریجر مشین خریدی جائے۔