نوشکی: جبری طور پر لاپتہ 2 نوجوان بازیاب ہوگئے

60

نوشکی سے لاپتہ نوجوان محبوب علی اور حبیب الرحمٰن بازیاب ہوگئے۔

دی بلوچستان پوسٹ نیوز ڈیسک کو موصول ہونے والی اطلاعات کے مطابق بلوچستان کے ضلع نوشکی سے گذشتہ کئی سالوں سے جبری طور پر لاپتہ ہونے والے دو نوجوان آج بروز ہفتہ بازیاب ہوکر اپنے گھروں کو پہنچ گئے۔

تفصیلات کے مطابق 20 نومبر 2016 کو کرکٹ گراونڈ سے فورسز کے ہاتھوں حراست میں لیے جانے کے بعد لاپتہ ہونے والے محبوب علی جمالدینی ولد لونگ اور 31 اکتوبر 2014 کو نوشکی کلی غریب آباد سے لاپتہ ہونے والے حبیب الرحمن مینگل ولد سعد اللہ مینگل بازیاب ہوکر گھر پہنچ گئے۔

لاپتہ افراد کے لواحقین نے ان کے بازیابی کی تصدیق کردی ہے جبکہ وائس فار بلوچ مسنگ پرسنز کی جانب سے نوجوانوں کے کوائف صوبائی حکومت سمیت دیگر انسانی حقوق کے اداروں کے پاس جمع کیے گئے تھے۔

ذرائع کے مطابق لاپتہ نوجوانوں کے لواحقین گذشتہ کئی مہینے سے کوئٹہ میں پریس کلب کے سامنے وی بی ایم پی کی جانب سے لاپتہ افراد کی بازیابی کیلئے قائم احتجاجی کیمپ میں شرکت کرکے اپنے پیاروں کی بازیابی کیلئے احتجاج کررہے تھے جبکہ محبوب علی کے کمسن بہن بھی اس احتجاج کا حصہ رہی ہے۔