بلوچستان: فورسز کا داعش سے تعلق رکھنے والے 2 افراد ہلاک کرنے کا دعویٰ

123
File Photo

دی بلوچستان پوسٹ نیوز ڈیسک کو موصول ہونے والی اطلاعات کے مطابق سرکاری حکام نے دعویٰ کیا ہے کہ بلوچستان کے ضلع بولان کے علاقے ڈھاڈر میں فورسز، حساس ادارے اور شکارپور پولیس نے مشترکہ آپریشن کیا جس کے نتیجے میں داعش سے تعلق رکھنے والے دو افراد مارے گئے۔

تفصیلات کے مطابق سیکیورٹی فورسز، حساس ادارے اور شکارپور پولیس نے سبی کے قریب ڈھاڈر میں مشترکہ آپریشن کیا جس کے نتیجے میں کالعدم تنظیم داعش سے تعلق رکھنے والے دو افراد مارے گئے، حکام کے مطابق مارے جانے والے افراد عبداللہ بروہی اور حفیظ پندرانی انتہائی مطلوب تھے۔

سیکیورٹی ذرائع کے مطابق ہلاک ہونیوالے افراد سیہون خودکش حملے کے ماسٹر مائنڈ تھے اور شکار پور امام بارگاہ دھماکے کے مرکزی ملزمان تھے۔

ذرائع کے مطابق مشترکہ آپریشن کے دوران دو افراد فرار ہوئے جن کی تلاش میں چھاپے مارے جارہے ہیں۔

رپورٹ کے مطابق ہلاک ہونیوالے افراد کے قبضے سے اسلحہ برآمد کرلیا گیا ہے، ہلاک ہونیوالے حفیظ پندرانی سندھ میں کالعدم تنظیم داعش کا نیٹ ورک چلا رہا تھا۔

واضح رہے کہ دو سال قبل درگاہ لعل شہباز قلندر میں دھمال کے دوران خودکش حملے کے نتیجے میں 76 سے زائد افراد شہید اور 250 سے زائد زخمی ہوگئے تھے، شہید ہونے والوں میں 20 بچے، 9 خواتین، 45 مرد اور ایک پولیس اہلکار شامل تھے۔