اسپین میں کچھ ہی گھنٹوں میں راہگیروں پر گاڑی چڑھانے کے دوسرے واقعے کے نتیجے میں 9 افراد زخمی ہوگئے جبکہ پہلے حملے میں 13 افراد ہلاک اور پچاس سے زائد زخمی ہوئے تھے۔

خیال رہے کہ اسپین کے شہر بارسلونا کے علاقے لاس رَمبلاس میں نامعلوم شخص نے ایک وین سڑک کنارے کھڑے لوگوں پر چڑھادی تھی جس کے نتیجے میں 13 افراد ہلاک اور 50 سے زائد زخمی ہوگئے تھے، لاس رمبلاس کا علاقہ اسپین میں سیاحت کے حوالے سے معروف ہے۔

ہسپانوی میڈیا رپورٹس کے مطابق دوسرا حملہ پہلے واقعے کے 8 گھنٹے کے بعد بارسلونا سے 120 کلومیٹر جنوب میں واقع کامبریل میں ہوا جہاں ایک گاڑی پیدل چلنے والے افراد پر چڑھا دی گئی جس کے نتیجے میں 9 افراد زخمی ہوئے۔

واقعے میں زخمی ہونے والوں میں ایک شخص کی حالت تشویشناک بتائی گئی، اسپین کی پولیس نے دعویٰ کیا کہ انہوں ںے واقعے کے ذمہ دار 5 ملزمان کو ہلاک کردیا ہے، جنہوں نے دھماکا خیز مواد سے بھری جیکٹس پہن رکھی تھیں۔

جبکہ داعش نے بارسلونا میں ہونے والے حملے کی ذمہ داری قبول کرلی ہے جس میں سیکڑوں افراد زخمی بھی ہوئے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here