خضدار اور پنجگور سے دو بھائیوں سمیت پانچ جبری لاپتہ

362

بلوچستان کے ضلع خضدار اور پنجگور سے پاکستانی فورسز نے دو سگے بھائیوں سمیت پانچ افراد کو جبری گمشدگی کا شکار بناکر نامعلوم مقام منتقل کردیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق خضدار کے علاقے کوڑاسک دوہلیڑی میں گذشتہ تین دنوں سے فوجی آپریشن جاری ہے دوران آپریشن فورسز نے دو سگے بھائیوں کو حراست میں لے کر لاپتہ کردیا ہے۔

خضدار سے لاپتہ ہونے والوں میں بشیر احمد ولد تاج محمد سمالانی اور انکے چھوٹے بھائی شامل ہیں۔

علاقائی ذرائع کے مطابق پچھلے تین دنوں سے فورسز کی آپریشن جاری ہے جو علاقے سے بڑی تعداد میں عام لوگوں کے اونٹ اور گدھے چھین کر خضدار اور مشکے کے پہاڑی سلسلوں میں داخل ہوئے ہیں۔

تاہم حکام کا موقف اس آپریشن کے حوالے سے تاحال سامنے نہیں آئی ہے۔

دوسری جانب پنجگور سے اطلاعات ہیں کہ گذشتہ شب فورسز نے ایک شادی کی تقریب پر دھاوا بول کر تین افراد کو جبری گمشدگی کا شکار بناکر نامعلوم مقام منتقل کردیا ہے۔

لاپتہ ہونے والوں کی شناخت ضیاء ولد نور اللہ، انعام ولد اسحاق اور ماجد ولد عبدلحمید کے ناموں سے ہوئی ہے۔