ڈیرہ بگٹی: فورسز کیساتھ جھڑپ میں تین ساتھی شہید، آٹھ اہلکاروں سمیت 2 مخبر ہلاک ہوئے – بی آر اے

200

بلوچ ریپبلکن آرمی کے ترجمان سرباز بلوچ نے نامعلوم مقام سے میڈیا کو جاری بیان میں کہا ہے کہ آج صبح ڈیرہ بگٹی کے علاقے مزارانی میں بلوچ مزاحمت کار گشت پر معمور تھے جب ان کا سامنا پاکستان فورسز سے ہوا جہاں ریاستی اہلکار پہلے سے گھات لگا کر بیٹھے ہوئے تھے اس دوران سرزمین کے سربازوں اور پاکستان فوج کے درمیان دس گھنٹے سے زائد مسلسل جھڑپیں ہوتی رہی جس کے نتیجے میں دو مخبروں سمیت آٹھ اہلکار ہلاک اور ایک درجن کے قریب زخمی ہوگئے۔

ترجمان نے کہا کہ مارے جانے والے مخبروں میں سے ایک کی شناخت فیضا ولد مہردین سزی زائی شمبانی کے نام سے ہوئی ہے جبکہ تنظیم کے تین سرباز شہید فاڈو عرف توفیق بگٹی، شہید ہزارو عرف کجی بگٹی اور نیٹ ورک کمانڈ شہید علی حان عرف ڈیہو بگٹی شہید ہوگئے۔

سرباز بلوچ نے کہا ہے کہ تینوں ساتھی گذشتہ پندرہ سالوں سے سرزمین کے دفاع میں برسریپیکار تھے۔ شہید ڈیہو بگٹی نے جوانمردی سے دشمن کا مقابلہ کیا اور اپنے دیگر ساتھیوں کو باحفاظت نکالنے میں مدد فراہم کی اور خود شہادت کے عظیم رتبے پر فائر ہوگئے۔

ترجمان نے مزید کہا ہے کہ بی آر اے شہید ساتھیوں کو خراج عقیدت پیش کرتی ہے جنہوں نے اپنی ساری زندگی قومی جہد میں مادر وطن کی دفاع میں گزاری اور ہر طرح کے مشکلات کا سامنا کیا مگر کبھی اپنے فکر سے غافل نہیں رہے۔