پاکستان تعمیری مذاکرات میں شرکت و دہشت گردوں کے خلاف کارروائی کو یقینی بنائے : امریکہ

22

 امریکی سینئر سفارتی اہلکار ایلس ویلز کا کہنا ہے کہ امریکا پاک بھارت تعلقات کی بہتری کے لیے نتیجہ خیز مذاکرات کی حمایت کرے گا۔

امریکی اسٹیٹ ڈپارٹمنٹ میں جنوبی اور وسطی ایشیا بیورو کی سربراہ کا کہنا تھا کہ امریکا نے پاکستان کو 2 واضح پیغام بھیجے ہیں جن میں سے ایک مذاکرات میں تعمیری شرکت اور دوسرا پاکستان پر دہشت گردوں کے خلاف کارروائی کا وعدہ پورا کرنے کی ضرورت پر زور دیا گیا ہے۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق جب ان سے پوچھا گیا کہ کیا پاکستان نے امریکی سیکریٹری اسٹیٹ امئیک پومپیو کے ذریعے مذاکرات کا کوئی پیغام ارسال کیا اور ان کی بھارتی وزیر خارجہ سے ملاقات میں یہ معاملہ اٹھایا گیا توایلس ویلز نے اس حوالے سے لاعلمی کا اظہار کیا۔

خیال رہے کہ امریکی سیکریٹری اسٹیٹ نے گذشتہ ہفتے پاکستان اور بھارت کا دورہ کیا تھا جس میں پاکستان میں انہوں نے پاکستانی وزیر اعظم عمران خان اور آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ سے ملاقات کی تھی۔

ادھر نئی دہلی میں ان کی امریکی ملٹری چیف جنرل جوزف ڈنفرڈ کے ہمراہ بھارتی حکام سے دونوں ممالک کے 2،2 افراد پر مشتمل ملاقات ہوئی تھی۔

خیال رہے کہ ان دونوں دوروں کا بظاہر آپس میں کوئی تعلق نہیں تھا تام بھارتی میڈیا کی رپورٹس میں یہ دعویٰ سامنے آیا تھا کہ پاکستانی حکام نے مائیک پومپیو سے بھارت کو مذاکرات کے حوالے سے پیغام ارسال کرنے کی درخواست کی تھی۔

تاہم امریکی عہدیدار ایلس ویلز کا ایسے کسی بھی پیغام کی تصدیق یا تردید کیے بغیر کہنا تھا کہ امریکا پاک بھارت مذاکرات کی حمایت کرے کا جس سے دونوں ممالک کے درمیان کشیدگی کو کم کرنے میں مدد ملے گی۔

ان کا مزید کہنا تھا ہم عمران خان کے وزیر اعظم پاکستان منتخب ہونے کے بعد بھارت کے وزیراعظم نریندر مودی سے ہونے والی گفتگو کا بھی خیر مقدم کرتے ہیں۔

اس کے ساتھ انہوں نے دونوں ممالک کے درمیان روابط کے ذرائع کابھی ذکر کیا، جس میں قومی سلامتی کے مشیروں اور ڈی جی ایم اوز کے درمیان مذاکرات اور عوام کا عوام سے رابطہ شامل ہے۔