تینا کوشست اٹ- مولانا وحید الدین، قاسم ناز بلوچ

31

تینا کوشست اٹ

نوشت مولانا وحید الدین – کتاب رازئے حیات

مَٹ: قاسم ناز بلوچ

تب نا پُہو مروکا خواخہ غاک “ماہر نفسیات” آک دا اندازہ ئے خلکُنو بندغ ئس ودشتی وڑئٹ ہرا صلاحیت آتا خواجہ مریک مالک مریکک ایہُن او ہندافتا دہ فیصد استعمال ئے کیکک۔

دا پٹ و پول نا ردئٹ ہارو رڈیوورسٹی نا پروفیسر ئس پاہک کہ ننے انتس مروئی ئے نن او وڑ مننگ خواپنہ نن پین تن گلہ کینہ کہ ننے ننا حقاتے تفسا۔

ولے غٹ ان مست ننے تینے آن گلہ کروئی ئے کہ اللہ تعالی ننے بھازا صلاحیت آتا خواجہ کرے ہندن دا دنیائے ننکن جوڑکرے ننا ترقی او سرسوبی کن اینو نن دا دنیا نا مقابلہ ٹی اسہ چٹ نزورو زند ئس تدفنگ ئے سلیسُنک۔

ہر بندغ کن دا المی ئے کہ او ایلوفتے اُننگان مُست تینے جوان خوڑتی ئٹ اُرے، تینے پُہو مرے پہو مننگ نا کوشست ئے کے انتے کہ بندغ تینا تینٹ دوست ہم مریکک دشمن ہم۔ ہندن پیشن بندغ نا نہ دوست ئس مریک نہ دشمن ئس۔ بندغس تینا کوشست تینا محنت آتے استعمال کے سرسوبی خننگ کیک ہندن او اگہ کوشست او محنت کتو سرسوبی خنپک ہرادے پارہ بے سوبی۔

دا زیات المی ئے کہ بندغ ئس تینا محنت او کوشست آتے راست استعمال کے یعنی او جوانو سوچ ئس تخے ہمو جواننگا سوچ نا زی آ محنت کے سرسوب مریکک ہندن اگھ او رد ءُ نیمہ سے آ محنت کرے کوشست ئے استعمال کرے دُن چا کہ تینا محنت کوشست آتے بے پوک کرے۔

مُست انا بندغ آتا خڑک دولت مند مننگ نا بیرہ اسہ ضروت ئس اسوکا کہ آہن ئسے خیسُن جوڑکننگ۔ اوفک قیمتی گڑا اگھ تکارہ تو بیرہ خیسن ئے تکارہ او وخت ئنا بھلو بندغس ہزارا سالاتن آہن ئے خیسُن جوڑ کننگ نا رندٹ کوشست کریرک مگر اوفتا بشخ ئٹ داڑن بیدس ہچ ئس بتو کہ اوفک تینا وخت پیسہ ئے پوک کریرہ اسہ دئے ئس مفلسی ئٹ کسکُرہ ایسر مسُرہ۔

ولے خدانا نظامٹ داڑن بیدس اسہ پین بھلو امکان ئس موجود اسکہ او آہن ئے مشن ئٹ جوڑ بدل کننگ، ہندن حاضر وخت ئٹ مغربی قومک دا رازئے ہیل کریر تینا محنت کوشست اتے ہندانا رندئٹ خلکُر کریرک اوفک آہن ئے مشن ئٹ بدل کریر دانا جوانی دا مس اوفک آہن خیسن یاقوت چاندی آن زیات دولت پیسہ کٹنگ ہندن سرسوبی نا نیمہ غا بسُر سرسوب مسُر۔