ایران کو اپنی سرگرمیوں کی بھاری قیمت چکانی پڑے گی – امریکہ

68

امریکہ کے وزیر خارجہ مائیک پومپیو نے کہا ہے کہ ان کا ملک ایران کو یہ دکھانا چاہتا ہے کہ اسے اپنی سرگرمیوں کی حقیقی معنوں میں بھاری قیمت ادا کرنا پڑے گی۔

انہوں نے ان خیالات کا اظہار متحدہ عرب امارات کے اپنے دورے میں کیا۔

 عرب کے سکائی نیوز چینل سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ہماری توجہ بدستور اس غلط طرز عمل کو جاری رکھنے کے لیے ایران کی مالی استعداد کو روکنے پر مرکوز رہے گی۔

پومپیو نے کہا کہ اس میں پابندیوں کا ایک سلسلہ بھی شامل ہے ، جن کا ہدف ایرانی عوام نہیں ہیں ، بلکہ اس کی بجائے ہمارا واحد مقصد و مشن ایرانی حکومت کو یہ باور کرانا ہے کہ ان کا تباہ کن طرز عمل قابل قبول نہیں ہے۔

امریکی وزیر خارجہ پومپیو نے متحدہ عرب امارات کے اپنے اس مختصر دورے میں ابوظہبی کے طاقت ور ولی عہد محمد بن زید النہان سے بھی ملاقات کی۔

امریکہ کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی قیادت میں تہران کے خلاف سخت تر موقف اختیار کیا ہے جس میں ایران کے جوہری ہتھیاروں کے پروگرام پر عالمی معاہدے سے علیحدگی بھی شامل ہے۔